آئی ایم ایف شرط: رواں مالی سال بجلی صارفین سے 721 ارب اضافی وصول کیے جائیں گے

اسلام آباد: عالمی مالیاتی ادارے (آئی ایم ایف) کی شرط پر رواں مالی سال بجلی صارفین سے 721 ارب اضافی وصول کیے جائیں گے۔

ستمبر تک سہ ماہی ایڈجسٹمنٹ کی مد میں بجلی ایک روپے25  پیسے فی یونٹ مہنگی ہوگی جس سے 39 ارب موصول ہوں گے جب کہ ستمبر سے دسمبر تک فیول ایڈجسٹمنٹ کی مد میں 4 روپے 37 پیسے فی یونٹ بجلی مہنگی ہوگی اور 122 ارب روپے موصول کیے جائے گیں۔

اس کے علاوہ سالانہ ریبیسنگ کی مد میں 5 روپے 75 پیسے بجلی مہنگی کرنے سے 560 ارب موصول ہوں گے۔

وزارت خزانہ کے ذرائع کے مطابق رقم توانائی شعبے کے گردشی قرضہ میں کمی لانے کیلئے استعمال کی جائے گی، رواں مالی سال کے اختتام تک پاور سیکٹر کا گردشی قرضہ 2130 ارب تک محدود کیا جائے گا جب کہ جون 2023 تک پاور سیکٹر کا گردشی قرضہ 2700 ارب روپے کے لگ بھگ ہو چکا تھا۔

دوسری جانب وزارت خزانہ اور وزارت توانائی کا بجلی مہنگی پلان آئی ایم ایف کو بھی شیئر کردیا گیا ہے۔

یہ وڈیوز بھی دیکھیں:

https://youtube.com/shorts/U7Wj1djs3Bc

یہ بھی چیک کریں

رواں ماہ بجلی کے بلوں میں فیول پرائس ایڈجسٹمنٹ میں کمی کا اعلان

اسلام آباد: ترجمان پاور ڈویژن نے رواں ماہ بجلی کے بلوں میں فیول پرائس ایڈجسٹمنٹ  …