توہین رسالتﷺ کی مرتکب خاتون کو موت کی سزا سنادی گئی

راولپنڈی: عدالت نے توہین رسالت کی مجرمہ عنیقہ عتیق کو جرم ثابت ہونے پر سزائے موت سنا دی۔ 

 راولپنڈی کی انسداد سائبر کرائم کی عدالت کے ایڈیشنل سیشن جج عدنان مشتاق نے توہین رسالت و توہین مذہب کیس میں نامزد اور مرکزی مجرمہ عنیقہ عتیق کو جرم ثابت ہونے پر سزائے موت سنا دی۔ کیس کی سماعت اڈیالہ جیل میں ہوئی مجرمہ بھی عدالت موجود تھی۔

عدالت نے مجرمہ کو توہین رسالت کے جرم میں دفعہ 295 سی کےتحت سزائے موت اور 5 لاکھ روپے جرمانہ، توہین مذہب کے جرم میں دفعہ 295 اے کےتحت 10 سال قید اور 50 ہزار روپے جرمانہ، توہین مذہب گفتگو میں 3 سال قید اور 50 ہزار روپے جرمانہ اور سائبر کرائم کےجرم میں 7 سال قید اور 50 ہزار روپے جرمانہ کی سزا سنائی۔

مجرمہ نے سوشل میڈیا پر توہین آمیز کلمات استعمال کیے اور توہین رسالت کا جرم کیا، جس بنا پر ایف آئی اے سائبر کرائم ونگ نے 13 مئی 2020 کو مقدمہ درج کیا تھا۔

یہ بھی چیک کریں

آزاد کشمیر میں نام نہاد دہشتگردوں کے کیمپوں کا بھارتی دعویٰ بے بنیاد ہے: پاک فوج

راولپنڈی:پاک فوج کا کہنا ہے کہ بھارتی فوج کے اعلیٰ افسر کا آزاد جموں و …