بجلی بحران سنگین: 350 میگاواٹ بجلی پیدا کرنیوالا پاور ہاؤس پھر بند

بجلی کے بحران کے باعث 29 مارچ کو دوبارہ چلایا جانے والا 350 میگاواٹ  بجلی پیدا کرنے والا پاور ہاؤس فرنس آئل کی عدم فراہمی پر ایک بار پھر بند ہوگیا۔

جامشورو تھرمل پاور ہاؤس کے سینئر افسر کے مطابق جامشورو تھرمل پاور ہاؤس کو گزشتہ حکومت کی جانب سے طویل عرصے تک بند کرکے آئی پی پیز سے بجلی خریدی جارہی تھی تاہم بجلی کے شارٹ فال کی وجہ سے جامشورو پاور ہاؤس کو 29 مارچ کو دوبارہ فعال کرکے بجلی پیدا کرنے کا عمل شروع کیا گیا تھا۔

چار یونٹ 355 میگاواٹ بجلی پیدا کرکے نیشنل گرڈ میں فراہم کی جارہی تھی تاہم پی ایس او کی جانب سے اچانک تیل کی فراہمی روک دی گئی جس کے باعث چاروں یونٹس بند ہوگئے، تھرپاور ہاؤس پر پی ایس او کے کوئی واجبات نہیں ہیں۔

دوسری جانب ملک بھر میں بجلی کا شارٹ فال 6 ہزار میگاوات تک جاپہنچا جس کے باعث حیدراباد سمیت سندھ بھر میں 14 سے 18 گھنٹے کی لوڈ شیڈنگ جاری ہے۔

یہ بھی چیک کریں

چناب نگر میں مسلمان سیاستدانوں کی جانب سے قادیانیت نوازی پر اہل اسلام میں شدید تشویش

چناب نگر میں قادیانیوں کی دعوت طعام میں مسلمان سیاستدانوں اور تاجروں کی شرکتقادیانیوں پر …