مسئلہ کشمیرہمیشہ ہماری خارجہ پالیسی کا اہم ستون تھا، ہے اور رہے گا، وزیرخارجہ

وزیرخارجہ شاہ محمود قریشی کا کہنا تھا کہ مسئلہ کشمیر ہماری خارجہ پالیسی کا اہم ستون تھا، ہے اور رہے گا۔

5 فروری یوم یکجہتی کشمیر کے حوالے سے بات کرتے ہوئے وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی کا کہنا تھا کہ مقبوضہ جموں و کشمیر میں 1990 کی تاریخ آج پھر دہرائی جا رہی ہے، نہتے کشمیریوں کو کورڈن اینڈ سرچ آپریشن کا نشانہ بنایا جا رہا ہے اور انہیں ماورائے عدالت قتل کیا جا رہا ہے، معصوم کشمیریوں، عورتوں، بچوں کو بہیمانہ تشدد کا نشانہ بنایا جا رہا ہے، پاکستان، نہتے کشمیریوں کی سیاسی، سفارتی اور اخلاقی معاونت ہمیشہ جاری رکھے گا، مسئلہ کشمیر ہمیشہ ہماری خارجہ پالیسی کا اہم ستون تھا، ہے اور رہے گا، اس سال بھی ہم اپنے کشمیری بھائیوں کے ساتھ بھرپور انداز میں اظہار یکجہتی کریں گے۔

وزیرخارجہ کا مزیدکہنا تھا کہ مقبوضہ جموں و کشمیر بین الاقوامی سطح پر ایک تسلیم شدہ متنازعہ علاقہ ہے اور سلامتی کونسل کی متعدد قراردادیں اس حوالے سے موجود ہیں، کشمیریوں سے وعدہ کیا گیا تھا کہ اقوام متحدہ کی زیر سرپرستی، ان کو فیصلے کا اختیار دیا جائے گا اور ان کی رائے کا احترام کیا جائے گا۔

یہ بھی چیک کریں

آئی ایم ایف پاکستان کی نئی حکومت کے ساتھ کام کرنے پر آمادہ

عالمی مالیاتی فنڈ (آئی ایم ایف) نے پاکستان کی نئی منتخب حکومت کے ساتھ کام …