طیب اردگان کی یوکرین کو روس کے ساتھ ثالثی کی پیش کش

کیف: ترکی کے صدر رجب طیب اردگان روسی صدر پیوٹن کے دورہ ترکی سے پہلے یوکرین پہنچ گئے اور روس کے ساتھ ثالثی کی پیش کش کردی۔ یوکرین کے صدر نے پیش کش قبول کرتے ہوئے روس کے ساتھ مذاکرات ترکی میں کرنے کی حامی بھر لی۔

طیب اردگان نے کہا کہ ترکی دوست ممالک کے درمیان کشیدگی کم کرنے کے لیے ہمیشہ کوشاں رہتا ہے، دونوں رہنماؤں نے آزاد تجارت سمیت آٹھ معاہدوں پر دستخط کئے، اس سے پہلے برطانوی وزیراعظم بورس جانسن بھی یوکرین پہنچے اور یوکرین کو بھرپور حمایات کا یقین دلایا۔

دوسری جانب نیٹو کا کہنا ہے کہ روس نے مزید 30 ہزار افواج اور بھاری ہتھیار بیلا روس پہنچا دیئے ہیں، جنگی مشقوں کے لیے اپنا ائیر ڈیفنس سسٹم، S-400 بھی بیلا روس منتقل کردیا ہے۔

کریملن کا کہنا ہے کہ خطے میں امریکی افواج کی تعداد میں اضافہ کشیدگی کو مزید ہوا دے گا۔

یہ بھی چیک کریں

گیس لائن منصوبہ، ایران نے ڈیڈ لائن بڑھادی، تہران کا پاکستان پرسنجیدگی دکھانے کیلئے زور

اسلام آباد: ایران نے انتہائی زیادہ تاخیر کا شکار ایران پاکستان (آئی پی) گیس لائن …