او آئی سی وزرائے خارجہ کونسل کا اجلاس کل اسلام آباد میں ہوگا

اسلام آباد: اسلامی تعاون تنظیم (او آئی سی) کی وزرائے خارجہ کونسل کا غیر معمولی اجلاس کل  اسلام آباد میں ہوگا۔

او آئی سی وزرائے خارجہ کونسل کے 17 ویں غیر معمولی اجلاس میں افغانستان میں انسانی صورتحال پر تبادلہ خیال کیا جائے گا۔

ممبر ممالک کے نمائندگان کی پاکستان آمد کا سلسلہ جاری ہے۔ انڈونیشیا کی وزیر خارجہ اسلام آباد پہنچ گئی ہیں۔ کرغستان کے نائب وزیر خارجہ ، ملائیشیا اور بوسنیا کے وزیر خارجہ، افغانستان کے وزیر خارجہ مولوی امیر خان متقی بھی اسلام آباد پہنچ گئے ہیں۔ دفاعی پیداوار کی وفاقی وزیر زبیدہ جلال نے مہمانوں کا استقبال کیا۔

اجلاس میں اقوام متحدہ، یورپی یونین اور بین الاقوامی مالیاتی اداروں کے نمائندوں سمیت امریکہ، چین، روس، جرمنی، اٹلی، جاپان اور فرانس کے خصوصی مندوبین کو بھی دعوت دی گئی ہے۔

اس موقع پر اسلام آباد کو رنگا رنگ روشنیوں، مندوب ممالک کے جھنڈوں، استقبالیہ بینرز سے سجا دیا گیا ہے۔ سڑکوں اور راستوں کو رنگا رنگ روشنیوں سے سجایا گیا ہے۔ او آئی سی کے متعدد مندوبین کا ریڈکارپٹ استقبال کیا گیا ہے۔

وفاقی دارالحکومت میں سکیورٹی کے بھی فول پروف انتظامات کئے گئے ہیں۔ شہریوں کو ٹریفک کے رش سے بچانے اور مندوبین کی محفوظ نقل و حمل کو یقینی بنانے کے لیے وفاقی حکومت نے ہفتہ اور پیر (18 اور 20 دسمبر) کو شہر میں مقامی تعطیل کا اعلان کیا ہے۔

وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے کہا کہ کم از کم 90 غیر ملکی مندوبین افغانستان میں انسانی بحران سے نکلنے کے لیے غور و فکر اور راستہ تلاش کرنے کے لیے یہاں پہنچ چکے ہیں۔

انہوں نے مزید کہا کہ افغانستان کے عوام شدید مشکلات کا شکار ہیں، افغانستان میں انسانی بحران جنم لے سکتا ہے اسی وجہ سے دنیا کی توجہ افغانستان کی جانب مبذول کرانے کیلئے وزرائے خارجہ کانفرنس کا انعقاد کر رہے ہیں۔

وزیر خارجہ کا کہنا ہے کہ افغانستان سے متعلق پیشر فت نظر آرہی ہے، او آئی سی وزرائے خارجہ کونسل کی غیرمعمولی کانفرنس تاریخی ثابت ہو گی۔

یہ بھی چیک کریں

چناب نگر میں مسلمان سیاستدانوں کی جانب سے قادیانیت نوازی پر اہل اسلام میں شدید تشویش

چناب نگر میں قادیانیوں کی دعوت طعام میں مسلمان سیاستدانوں اور تاجروں کی شرکتقادیانیوں پر …