بھارت کے جاسوس آپریش پر پاکستان نے اقوام متحدہ سے تحقیقات کا مطالبہ کردیا


پاکستانی دفتر خارجہ نے عالمی میڈیا کی رپورٹ پر گہری تشویش کا اظہار کرتے ہوئے اقوام متحدہ اور متعلقہ اداروں سے تحقیقات کا مطالبہ کیا ہے۔

ترجمان دفتر خارجہ زاہد حفیظ چودھری کی جانب سے جاری بیان میں کہا گیا ہے کہ انڈین حکومت کی جانب سے عالمی قواعد کی خلاف ورزی کرتے ہوئے عالمی شخصیات اور اپنے شہریوں کیخلاف جو آپریشن کیا گیا ہم اس کی شدید مذمت کرتے ہیں۔

 

ان کا کہنا تھا کہ بھارت کی نام نہاد جمہوریت کا اصل چہرہ دنیا کے سامنے اس دن ظاہر ہو گیا تھا جب ای یو ڈس انفو لیب سے متعلق معلومات منظر عام پر آئی تھیں۔ 2019 میں انٹرنیٹ پر جعلی ویب سائٹس کے بارے میں تحقیق کرنے والی ایک یورپی کمپنی ڈس انفو لیب نے پاکستان مخالف جعلی ویب سائٹس کے انڈین نیٹ ورک کا سراغ لگایا تھا جس کا مقصد یورپی یونین اور اقوام متحدہ میں فیصلہ سازوں کو پاکستان کے حوالے سے اثر انداز کرنا تھا۔ 

یاد رہے کہ واشنگٹن پوسٹ میں ایک چونکا دینے والی رپورٹ میں انکشاف کیا گیا تھا کہ اسرائیلی کمپنی این ایس او کے جاسوسی سافٹ ویئر ’پیگاسس‘ کو استعمال کر کے پاکستانی وزیراعظم عمران خان کے زیر استعمال رہنے والے ایک فون نمبر کو بھی ہیک کرنے کی کوشش کی گئی تھی

یہ بھی چیک کریں

چناب نگر میں مسلمان سیاستدانوں کی جانب سے قادیانیت نوازی پر اہل اسلام میں شدید تشویش

چناب نگر میں قادیانیوں کی دعوت طعام میں مسلمان سیاستدانوں اور تاجروں کی شرکتقادیانیوں پر …