وفاقی حکومت کی جانب سے سرکاری ملازمین کو 15 فیصد الاؤنس دینے کا فیصلہ

اسلام آباد: وفاقی اداروں کے سرکاری ملازمین کے احتجاجی دھرنے سے ایک روز قبل حکومت نے فیصلہ کیا ہے کہ یکم مارچ سے کم مراعت یافتہ گریڈ ایک سے گریڈ 19 تک کےملازمین کو ان کی بنیادی تنخواہوں کے مطابق 15 فیصد تفاوت الاؤنس دیا جائے گا۔

رپورٹ کے مطابق وزارت خزانہ کی جانب سے جاری کردہ بیان میں صوبائی حکومتوں کو بھی سرکاری ملازمین کو سہولیات فراہم کرنے کے لیے اپنے فنڈز پر مذکورہ تجویز اختیار کرنے کی ہدایت کی گئی ہے۔

تحریری بیان میں مزید کہا گیا ہے کہ فنانس ڈویژن کی جانب سے طویل عرصے سے ایک ہی گریڈ پر خدمات انجام دینے والے سرکاری ملازمین کی ترقی کے لیے ٹائم اسکیل پروموشن کی سمری بنانے کا کام شروع کردیا گیا ہے۔

بیان میں یہ بھی کہا گیا ہے کہ ایڈہاک ریلیف/ الاؤنسز کو تنخواہوں میں ضم کرنے کا فیصلہ پے اینڈ کمیشن کی رپورٹ کے بعد کیا جائے گا۔

یاد رہے کہ وفاقی حکومت کے ماتحت ملازمین کی نمائندہ تنظیموں نے حکومت کی جانب سے انہیں خصوصی الاؤنس فراہم کرنے کے وعدے کی تکمیل میں ناکامی کےخلاف آج سے اسلام آباد میں احتجاج کا اعلان کیا تھا۔

یہ بھی چیک کریں

چناب نگر میں مسلمان سیاستدانوں کی جانب سے قادیانیت نوازی پر اہل اسلام میں شدید تشویش

چناب نگر میں قادیانیوں کی دعوت طعام میں مسلمان سیاستدانوں اور تاجروں کی شرکتقادیانیوں پر …